نماز

 

 

جو لوگ نفس کی نفی کرتے ہیں وہی لوگ الله کو پا لیتے ہیں ، اس لئے شیطان انکو کوئی نقصان نہیں پہو نچا سکتا – میں پنہا ما نگتا ہوں ذات کی شیطان مردود کے شر سے

 

  ١.

ب – سے بلندی زمین و آسمان کی

س – سےروشنی چاند و سورج کی

م – سے ملکیت ‘ الله کی تمام مقلوقت کی

ل – سے نفی ہوگی  ان تمام چیزوں کی

الر حمن – اسکا وجود مجھ میں آگیا

الر حیم – پیام نجات مجھے مل گیا

: ٢  نیت .

میرا نفس ساکت ہے ذات کی طرف رخ کر یگی ، میرا نفس ساکت ہو چکا ہے اسی لئے میں مشر کوں میں سے نہیں ہوں اگر میرا نفس ذات کی کسی حرکت میں دخل دیگا تو بیشک مشرک ہو گا

 

   ٣. 

: ہر شے میں اسی کی دھڑکن ہے اس لئے وو سب سے بڑا ہے

 

 ٤. 

پاک ہے وو ذات جو مجھ میں دھڑک رہی ہے اور سارے کاینات میں اسی کی دھڑکن اسکی حمد و ثنا بیان کر رہی ہے ، صفات کتنی بھی اونچی ہو جائے تعریف ذات کی ہی ہوگی کیوں کی مجھ سے لیکر جتنے بھی اباواجداد اے ہیں سب میں ذات جی کی دھڑکن ہے

 

 

جو لوگ نفس کی نفی کرتے ہیں وہی لوگ الله کو پا لیتے ہیں ، اس لئے شیطان انکو کوئی نقصان نہیں پہو نچا سکتا – میں پنہا ما نگتا ہوں ذات کی شیطان مردود کے شر سے

 ٥. 

 ٦. 

ہر شے میں اسی کی دھڑکن ہے اس لئے وو سب سے بڑا ہے

 ٧. رکوع

پاک ہے وو ذات جسکے مجھ میں آنے سے میری روح آسمان کے کناروں تک سفر کر سکتی ہے

 ٨. قومہ

جو کچھ بھی ذات کی تعریف اور حمد بیان کی گی ہے اس میں میں ساکت ہوں ، کیوں کے حرکت ذات کی ہے میری بات سواے الله کے کوئی نہیں سن سکتا

٩. تمجید

وو رب ہی ہے جو میرے سکوت کو محسوس کر سکتا ہے

١٠. سجدہ

پاک ہے وو ذات جسکے مجھ میں آنے سے میری روح عرش کا طواف کر سکتی ہے

١١. 

الله نے مجھے بخش دیا

١٢. قعدہ

نفس کو چھوڑ کر بیٹھنا برداشت کرنا بیٹھنے کے لے (بندگی) ، جو بھی الفاظ زبان سے نکلتے ہیں نفس کا دخل نہیں ہوتا – سلام ہو آپ پر نبی ﷺ رحمت اور برکتیں نازل ہو اور ان لوگوں پر سلامتی ہو جو نفس کی نفی کر چکے ہیں – آداب اور تعظیم کے سب کلمے الله ہی کے لیے ہیں، اور سب عبادتیں ایئر صدقے الله ہی کے لئے ہیں ، سلام ہو تم پر اے نبی ﷺ اور الله کی رحمتیں اور برکتیں – سلام ہو ہم پر اور الله کے نیک بندوں پر – کواہی دیتا ہوں کے کوئی صفت باقی نہیں رہیگی سواے ذات کے ، محمّد ﷺ الله کے بندے اور رسول ہیں

 

 

 

 

 

جو ذات سارے عالم کو دھڑکا رہی ہے اسی روح کے ذریعے محمّد ﷺ پر اور انکی آل پر رحمت اور سلامتی جس طرح تم اور تمہارے فرشتے ہر ذات والے کے ذریعے ایک دوسرے ذات والے کو درود و رحمت کا پیام پہنچاتے رہتے ہیں میں بھی آج ابراہیم علیہ اسلام اور انکی آل پر درود و سلام تیری ذات کے ذریعے بھیجتا ہوں

 

 

اے الله میں اپنی نفس پر بہت ظلم کیا ، تیری بندگی برداشت نہیں کر سکا ، تجھ سے ہٹ کر کس سے اپنی مخفرت چاہوں میرے نفس پر رحم کر بیشک تو ہی بخشنے والا اور پیام نجات دینے والا ہے

١٣. سلام

سلامتی ہو تم پر اور جن و انس جو ذات کو پہچا نتے ہیں اور رحمتیں نازل ہو

 

 

 

 

Translate »